World

خواتین کے ختنہ کرنے کا رواج: کیا ریکنسٹریکٹیو سرجری کے ذریعے اعضا کی اصل ساخت بحال ہو سکتی ہے؟

  • المى حسون
  • بی بی سی عربی، لندن

اگرچہ مصر کی شہری باسمہ کامل فرانس کے دارالحکومت پیرس پہنچنے پر اپنا پرس، پاسپورٹ اور دیگر اہم کاغذات کھو بیٹھی تھیں لیکن وہ مقصد جس کے لیے وہ یہاں آئیں تھیں وہ ان کے جوش و جذبے کو مانند نہیں کر پا رہا تھا۔

نو برس کی عمر میں باسمہ کے ختنہ کروائے گئے تھے (دنیا کے چند ممالک میں خواتین کے ختنہ کروانے کا رواج ہے) اور اب وہ ایک مشہور فرانسیسی ڈاکٹر سے ’ریکنسٹریکٹیو سرجری‘ کے بارے میں صلاح مشورہ کرنا چاہتی ہے۔ ریکنسٹریکٹیو سرجری اعضا کی اصل ساخت بحال کرنے کے لیے کی جاتی ہے۔

ختنے کے عمل نے باسمہ کے ذہن پر بہت گہرا اثر چھوڑا تھا اور وہ نوعمری ہی سے اس سوال کے جواب میں سرکرداں رہی تھیں کہ اُن کے ساتھ بچپن میں جو کیا گیا اس کی وجوہات کیا تھیں؟

وہ اس سوال کا جواب اس لیے بھی ڈھونڈنا چاہتی تھیں تاکہ اپنے ذہن میں اس حوالے سے آنے والے منفی خیالات سے نجات پا سکیں، وہ خیالات جو ایک عرصے سے ان کے ذہن کو جکڑے ہوئے تھے۔


Source link

International Updates by Focus News

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button