World

کیا یہ مونچھیں پہلی صدی عیسوی کے فیشن کو ظاہر کرتی ہیں؟

،تصویر کا کیپشن

یہ خیال ظاہر کیا جاتا ہے کہ یہ مجسمہ زرخیزی کے کلٹی یا سیلٹک دیوتا سرنونوس کی نمائندگی کرتا ہے

ایک ماہر آثار قدیمہ نے کہا ہے کہ کھدائی میں ملنے والے ایک چھوٹے سے مجسمے میں تراشے ہوئے بال اور مونچھیں پہلی صدی عیسوی میں رائج فیشن کا ثبوت ہو سکتے ہیں۔

واضح رہے کہ کیمبرج شائر میں نیشنل ٹرسٹ کے ویمپول سٹیٹ میں سیلٹک دیوتا کی پانچ سینٹی میٹر (یا دو انچ) مجسمے کی دریافت سے یہ بات سامنے آئی ہے۔

لوہے کے زمانے کے بعد کے زمانے سے لے کر ابتدائی دیہی رومن آبادی کے دور کے جو نوادرات سنہ 2018 میں ملے ہیں وہ مزید تجزیے کا موضوع رہے ہیں۔

جب اس مجسمے کو صاف کیا گیا تو اس کے متعلق ‘قابل ذکر’ تفصیلات سامنے آئیں۔


Source link

International Updates by Focus News

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button